فلمساز نے زریں خان پر قانونی کروائی کر نے کا اعلان کر دیا | Daily Qom
تازہ تر ین

فلمساز نے زریں خان پر قانونی کروائی کر نے کا اعلان کر دیا

معروف بھارتی اداکارہ زریں خان کے گزشتہ روز بیان کے بعدزریں خان کی مشکلات میں کمی ہونے کی بجائے اضافہ ہو گیا ہے۔ فلم “اکثر2” کے فلمسازنے اداکارہ زریں خان کے خلاف قانونی کروائی کر تے ہوئے گھیرا تنگ کر دیا ہے۔فلمساز نریندرنے بھارتی میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ زریں خان نے ان پر

جھوٹے الزامات لگائے ہیں اس لیے وہ اداکارہ پر قانونی کروائی کریں گے۔ نریندر نے اپنے بیان میں کہا کہ جو الزامات اداکارہ نے لگائے ہیں اب وہ قانون کی روشنی میں ان کی وضاحت دیں گی۔ گذشتہ دنوں وہ اپنی نئی آنے والی فلم ‘اکثر 2’ کی پروموشن کے لئے دہلی میں موجود تھیں۔ جہاں فلم کی پروموشن کے دوران انہیں پبلک میں جسمانی ہراسگی کا سامنا کرنا پڑا۔ حیرانی کی بات تو یہ تھی کہ اس پورے واقعے کے دوران فلم کے ہیرو سمیت کوئی بھی ان کی مدد کو نہ پہنچا۔اس واقعے کے بعد زرین خان نے اپنی فلم کی پوری ٹیم اور سیکیورٹی انتظامات سے دلبرداشتہ ہوکر اسی رات ممبئی واپس جانے کا فیصلہ کیا۔زرین خان کے قریبی ذرائع نے اس حوالے سے بولی وڈ لائف سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ‘آخری وزٹ سے قبل سب چیزیں ٹھیک چل رہی تھیں، تقریباً وہ تمام اشتہاری مراحل جن میں ان کی موجودگی ضروری تھی ان سے نمٹنے کے بعد وہ صرف 15 منٹ کے لئے آخری تقریب میں پہنچیں، وہ یہ دیکھ کر بہت حیران تھیں کہ انتظامیہ نے اشتہاری تقریب میں ان کا مقررہ وقت سے کچھ زیادہ لے لیا تھا’۔ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ ‘جب فلم کی کاسٹ بیٹھی ہوئی ڈنر کررہی تھی تو زرین نے اپنا کام ختم کرنے اور وہاں سے جانے کا فیصلہ کیا تاہم جیسے ہی وہ پبلک کے درمیان پہنچیں تو تقریباً 40 سے 50 لوگوں نے ان کا گھیراؤ کرلیا۔ وہاں کسی قسم کی کوئی سیکیورٹی بھی موجود نہیں تھی، ہر شخص ان کے ساتھ تصویریں بنانے کے لئے اپنا کیمرہ زبردستی ان کے منہ کی جانب بڑھا رہا تھا۔ اسی دوران انہیں شدید نوعت کا سامنا کرنا پڑا’۔ذرائع نے مزید بتایا کہ ‘اس پوری مشکل ترین صورتحال میں فلم کی ٹیم کا کوئی بھی میل ممبر ان کا ساتھ دینے نہ پہنچا، یہاں تک کہ کوئی مدد کے لئے آگے تک نہ بڑھا۔ حالات کنٹرول سے بالکل باہر ہوگئے تھے۔ تاہم انہوں نے اس مشکل صورتحال کا سامنا کرنے کے باوجود اپنے طے کردہ معاملات کو پورا کیا اور رات کو ممبئ کی فلائٹ سے روانگی کی’۔

اس وقت سب سے زیادہ پڑھی جانے والی خبریں
صحت اورتندرستی
No News Found.
عجیب و غریب
No News Found.